439

ایون فیلڈ ریفرنس: سب سے بڑی کرپشن کا بڑا فیصلہ آج سنایا جائے گا

اسلام آباد(ورلڈ پوائنٹ نیوز) شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس میں سب سے بڑی کرپشن کا بڑا فیصلہ آج احتساب عدالت میں سنایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق ایون فیلڈ ریفرنس پر 9 مہینے اور 20 دن جاری رہنے والی ٹرائل کے بعد آج وہ اہم دن ہے جب بڑی کرپشن کے بڑے ملزمان کو قانون کے شکنجے میں کسا جائے گا۔

سو سے زائد پیشیاں بھگتنے اور چار سو گھنٹے دلائل کی سولی پر چڑھے رہنے والے ملزمان سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف اور صاحب زادی مریم نواز کا انجام کیا ہوگا، کیا نواز کو سزا ہوگی، قوم کی نظریں احتساب عدالت پر لگی ہوئی ہیں۔

خیال رہے کہ ملزم نواز شریف نے کیس کا فیصلہ مؤخر کرنے کے لیے احتساب عدالت میں درخواست بھی دائر کر دی ہے، نواز شریف نے اپیل کی ہے کہ مزید سات دن کی مہلت دی جائے۔

احتساب عدالت میں فیصلہ مؤخر کرنے کی درخواست کے ساتھ مرکزی ملزم کی اہلیہ کلثوم نواز کی میڈیکل رپورٹ بھی جمع کرا دی گئی ہے، کیا عدالت درخواست قبول کرتے ہوئے فیصلہ مؤخر کر دے گی؟

کسی بھی ممکنہ ردعمل سے نمٹنے کے لیے عدالت کی سیکورٹی بڑھانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے، ضلعی انتظامیہ نے احتساب عدالت کے باہر رینجرز کو طلب کر لیا، خط میں رینجرز کے 500 اہل کاروں کی تعیناتی کی درخواست کی گئی ہے۔

وزارتِ داخلہ نے رینجرز تعینات کرنے کی منظوری دے دی، درخواست کے مطابق رینجرز اہل کار احتساب عدالت کے اندر اور باہر تعینات کیے جائیں گے.

شریف خاندان کے خلاف ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت مکمل، فیصلہ جمعے کو سنایا جائے گا
واضح رہے کہ شریف خاندان کے خلاف مختلف ریفرنسز کی سماعت کے دوران کئی اہم معاملات سامنے آئے جن میں جعلی فونٹ اور جعلی کاغذات سے لے کر اصلی جائیداد، پاناما، اقامہ اور ایون فیلڈ ریفرنس شامل ہیں۔

قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ ذرائع آمدن کے سلسلے میں کیس ثابت ہونے پر شریف فیملی کو چودہ سال قید سمیت پانچ سزائیں ہوسکتی ہیں، قید کے بعد دس سال نا اہلی بھی ہوسکتی ہے، اگر ملزمان عدالت میں پیش نہ بھی ہوں تو فیصلے پر فرق نہیں پڑے گا۔

خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں