343

سوچی اجلاس ختم،تینوں صدور کا شام کی صورت حال پر امن بنانے پر زور

سوچی (شاہد گھمن سے) سوچی میں ہونے والا شام سے متعلق سہ فریقی اجلاس اختتام پزیر ہوگیا ہے،روسی صدر پیوٹن، ترک صدر رجب طبب اردوان اور ایرانی صدر حسن روحانی نے اپنے مشترکہ اعلامیے میں شام کےمتنازعہ موضوعات کے خلاف مشترکہ موقف اپنانے کی ضرورت پر زور دیا ۔

رہنماوں نے شامی سالمیت ،خود مختاری اور قیام اتحاد کے عزم کا اظہار کرتےہوئے زور دیا کہ امریکہ کے شام سے انخلا کی صورت میں وہاں بحالی امن اور سلامتی کو ممکن بنانے کی کوششیں تیز کی جائیں گی علاوہ ازیں ، ادلب میں کشیدگی ختم کرنے اور جنگ بندی ک خلاف ورزیوں کو ممکن بنانے کےلیے بھی مشترکہ مفاہمت کا اعلان کیا اور اس بات کی تائید کی کہ شام کے مسئلہ فوجی مداخلت کے بجائے مذاکرات سے حل کرنے کی ضرورت ہے جس کےلیے شام کے تمام سیاسی طبقوں کو اپنی قائدانہ صفوں میں سلامتی کونسل کی قراردادوں کا احترام کرنا ہوگا۔

رہنماوں نے مخالفین اور انتظامیہ نواز گروپوں کے درمیان قیدیوں کی رہائی کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ شام کےلیے انسانی امداد میں اضافے کےلیے اقوام متحدہ اور دیگر امدادی تنظیموں سے کوششیں تیزکرنے کا مطالبہ کیا جائے گا۔

آستانہ معاہدے کے سلسلے کا 12 واں اجلاس اگلے ماہ ترکی میں منعقد کرنے پر بھی تینوں صدور نے حمایت کا اعلان کیا ۔

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں