518

شام میں روسی طیارے کی تباہی کا ذمہ دار اسرائیل ہے، جوابی کارروائی کا حق حاصل ہے: روس

ماسکو، رپورٹ: شاہد گھمن

روسی طیارہ ایل 20 شام کے شمال مغرب میں اپنے اڈے پر واپس آ رہا تھا جسے گزشتہ رات نشانہ بناکر تباہ کردیا گیا تھاجس پر سوار 15 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ آج پریس کانفرنس میں روس نے شام میں مار گرائے جانے والے فوجی طیارے کا ذمہ دار اسرائیل کو قرار دیا ہے.

روس نے شام میں فوجی طیارہ تباہ ہونے پر اسرائیل کو خبردار کیا ہے کہ وہ جوابی کارروائی کا حق رکھتا ہے.شام میں روسی فوجی طیارہ تباہ ہونے کے بعد روسی وزارتِ خارجہ نے ماسکو میں تعینات اسرائیلی سفیر کو بھی طلب کر لیا ہے۔
روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے اطلاعات کے مطابق اسرائیلی سفیر کو بتایا کہ جہاز میں سوار 15 روسی اہلکاروں کی ہلاکت کی مکمل ذمہ داری اسرائیل پر عائد ہوتی ہے۔روس کی وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ اسرائیل کے جنگی جہازوں نے پیر کو آئی ایل-20 طیارے کو شامی دفاعی نظام کے دائرے کی جانب دھکیلا اور وہ ماسکو کو شام میں اہداف کو نشانہ بنانے کے بارے میں زیادہ واضح انداز میں مطلع کرنے میں ناکام رہا.

ابھی تک اسرائیل کی جانب سے روسی الزام پر کوئی ردرعمل سامنے نہیں آیا ہے۔ اسرائیل عام طور پر شام میں فضائی کارروائیوں کے بارے میں آگاہ نہیں کرتا ہے تاہم اسرائیلی فوج کے حکام نے حال ہی میں تسلیم کیا تھا کہ انھوں نے شام میں گذشتہ 18 ماہ کے دوران 200 ایرانی اہداف کو نشانہ بنایا۔اطلاعات کے مطابق اسرائیل کے ایف 16 جیٹ طیاروں کے لاذقیہ میں شامی اہداف پر حملے کے دوران روسی فوجی طیارہ آئی ایل-20 کو شامی فضائی حدود میں داخل ہونے کے بعد حادثے کا سامنا ہوا۔

روسی وزارت دفاع کا کہنا تھا کہ طیارے سے پیر کی شب مقامی وقت کے مطابق رات 11 بجے رابطہ منقطع ہو گیا۔شام کے سرکاری میڈیا میں بھی طیارے کے لاپتہ ہونے سے پہلے رپورٹ کیا گیا کہ علاقے میں حملہ ہوا ہے اور ان اطلاعات کے مطابق لاذقیہ میں کھلے سمندر سے آنے والے دشمن کے میزائلوں کو روکا گیا ہے۔شام میں گذشتہ سات سالوں سے خانہ جنگی جاری ہے جس میں اب تک لاکھوں افراد ہلاک اور بے گھر ہو چکے ہیں. روس نے ایک بیان میں اسرائیل کی غیر ذمہ دارانہ کارروائیوں پر اس واقعے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسے فضائی کارروائی سے صرف ایک منٹ پہلے وارننگ دی گئی تھی اور یہ فضائی نگرانی کے طیاروں کو راستے سے ہٹانے کے لیے ناکافی وقت ہوتا ہے۔

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں