432

ماڈل ہاؤسنگ اسکیم کاچیف ایگزیکٹو فرحان چیمہ دھوکہ دہی اور کرپشن کے الزام میں گرفتار

لاہور (ورلڈ پوائنٹ نیوز) نیب لاہور نے گزشتہ روز ایک ہائوسنگ سکیم ماڈل ہاؤسنگ انکلیو کے چیف ایگزیکٹو فرحان چیمہ کو بڑے پیمانے پر کرپشن کے الزام میں گرفتار کر لیا ۔ الزام ہے کہ وہ اور دیگر ڈائریکٹرز دھوکہ دہی کے ذریعے غیرقانونی فائلیں فروخت کرتے تھے ۔ ملزمان نے ماڈل ہاؤسنگ انکلیو کو نہ تو ایل ڈی اے سے منظور کروایا نہ ہی ملزمان کے پاس منظور شدہ لے آئوٹ پلان تھا۔محض چند کنال زمین کی ملکیت پر اشتہاربازی سےعوام کو اربوں روپے کے پلاٹس کی بوگس فائلیں فروخت کیں۔ رعائتی واؤچر کے نام پر بھی سینکڑوں لوگوں کو دھوکہ دیا۔ گزشتہ روز نیب لاہور نے گرفتار چیف ایگزیکٹو ماڈل ہاؤسنگ انکلیو ملزم فرحان چیمہ،ڈائریکٹرز محمد قاسم اور فرحاد علی کو احتساب عدالت میں پیش کیا ۔ نیب حکام کے مطابق ملزمان نے محض چند کنال زمین کی ملکیت پر عوام سے اربوں روپے کے پلاٹس کی بوگس فائلیں فروخت کیں،ملزم فرحان ساتھی ڈائریکٹرز کی ملی بھگت سے اشتہارات کی مدد سے غیر قانونی سوسائٹی کے نام پر اربوں روپے بٹورتا رہا،ملزمان نے رعائتی واچر کے نام پر سینکڑوں لوگوں کو دھوکہ دیا،ملزم فرحان چیمہ کے بیرون ملک فرار ہونے کے خدشہ پر ملزم کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ۔نیب کی جانب سے احتساب کی استدعا کی گئی جس پر احتساب عدالت نے تینوں ملزمان کو 10روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر دیا ۔یاد رہے کہ فرحان چیمہ سٹی ہائوسنگ گوجرانوالہ میں بھی اپنی خدمات سرانجام دے چکا ہے اور گوجرانوالہ میں ایک بڑے عہدے پر تعینات تھا۔

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں