320

میانمار میں آپریشن کلئیرنس کے نام پر 400 سے زائد مسلمانوں کو قتل کیا گیا، اقوام متحدہ


نیویارک: اقوام متحدہ کے مطابق بدھ مت انتہاپسندوں کے ظلم و ستم اور حالیہ پرتشدد کارروائیوں سے تنگ 50 ہزار سے زائد روہنگیا مسلمان میانمار سے ہجرت کرکے بنگلا دیش چلے گئے ہیں جب کہ سیکیورٹی فورسز کی جانب سے آپریشن کلئیرنس کے بہانے 400 سے زائد مسلمانوں کو قتل کیا جاچکا ہے۔
اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق میانمار میں روہنگیا مسلمان بدھ مت انتہاپسندوں کے ظلم و تشدد کا شکار ہیں اور گزشتہ جمعہ سے لے کر اب تک 400 سے زائد مسلمانوں کو موت کے گھاٹ اتارا جاچکا ہے۔ جب کہ 50 ہزار سے زائد مسلمان اپنی جانیں بچا کر بنگلا دیش ہجرت کرچکے ہیں اور 20 ہزار مسلمان تاحال بنگلا دیش کی سرحد پر موت اور زندگی کی کشمکش میں مبتلا ہیں اور کئی افراد دریاؤں کے ذریعے ہجرت کی کوشش میں ڈوب کر اپنی جانیں گنوا چکے ہیں۔
رپورٹ کے مطابق گزشتہ جمعے کو میانمار میں پولیس چیک پوسٹ پر حملے میں 11 پولیس اہلکاروں کی ہلاکت کے بعد سیکیورٹی فورسز کی جانب سے آپریشن کلیئرنس کا آغاز کیا گیا تھا لیکن ساتھ ہی انتہاپسندوں کی جانب سے پرتشدد کارروائیوں میں بھی خاطر خواہ اضافہ دیکھنے میں آیا اور چیک پوسٹ حملے کے واقعے کے بعد درجنوں دیہاتوں کو آگ لگا دی گئی اور متعدد مسلمانوں کو زندہ جلا دیا گیا اور اب تک بچوں و خواتین سمیت 400 افراد کو ہلاک کیا جاچکا ہے۔

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں