440

پاکستان کی فوج نے روسی کوہ پیما کو بچا لیا

پاکستان کی فوج نے ملک کے شمال میں ایک پہاڑ پر کئی دنوں سے پھنسے روسی کوہ پیما کو بچا لیا ہے۔ پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ سطح سمندر سے بیس ہزار فٹ سے زائدکی بلندی پر ریسکیو آپریشن کیا گیا ہے۔

پاک فوج دنیا کی بہترین فوج ہے۔ روسی کوہ پیما

Gepostet von Pakistan Cyber Defence News am Dienstag, 31. Juli 2018

نیوز ایجنسی روئٹرز کی جانب سے شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق روسی کوہ پیما الیگزنڈر گوکوو کو لاتوک ون نامی پہاڑ سے ریسکیو کیا گیا۔ اس کوہ پیما کا ساتھی پہلے ہی ہلاک ہو چکا تھا ۔ کئی مرتبہ پاکستان فوج کی جانب سے کوششوں کے بعد بالآخر آج روسی کوہ پیما کو بچا لیا گیا۔ گزشتہ بدھ کو الیگزنڈر اور ان کے ساتھی کوہ پیما سرگئی گلازاوناو پہاڑ کو سر کرنے کے بعد نیچے کی طرف رواں تھے جب سرگئی اپنی جان کھو بیٹھے۔

پاکستان الپائن کلب کے سکریٹری قرار حیدری کا کہنا ہے،’’ الیگزانڈر نے ایک ’ایس او ایس‘ پیغام بھیجا تھا اور اسے ریسکیو کیے جانے کی امید دلائی گئی اور اسے کہا گیا کہ وہ انتظار کرے۔ اس نے اپنے گرد برف کی ایک ڈھال تعمیر کر لی تھی اور اس نے سیٹیلائٹ کے ذریعے رابطہ قائم رکھا۔‘‘

اس روسی کوہ پیما کو منگل کی صبح ہیلی کاپٹر کی مدد سے بچا لیا گیا اور اسکردو کے ایک ہسپتال میں پہنچا دیا گیا ہے۔ حیدری کا کہنا ہے کہ الیگزنڈر کی حالت اچھی ہے حالانکہ اس نے تین روز سے کچھ نہیں کھایا تھا۔ فوج کا کہنا ہے کہ خراب موسم کے باعث وہ اسے پہلے ریسکیو نہیں کر پا رہے تھے۔ ان دو روسی کوہ پیماؤں نے 12 جولائی کو کوہ پیمائی کا آغاز کیا لیکن وہ بلندی تک پہنچنے میں ناکام ریے اور انہوں نے نیچائی کی طرف سفر کا آغاز کر دیا۔

پاکستان کو کوہ پیماؤں کی جنت کہا جاتا ہے لیکن یہاں انتہائی سخت اور خطرناک پہاڑوں پر کئی کوہ پیما اپنی جان بھی کھو بیٹھتے ہیں۔ ماضی میں بھی کئی مرتبہ پاکستان کی فوج نے ریسکیو آپریشن کر کے کوہ پیماؤں کی جان بچائی ہے۔

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں