470

پلوامہ حملے کا تعلق پاکستان سے جوڑنا بھارت کاجھوٹا پراپیگنڈا ہے، سفیر پاکستان قاضی خلیل اللہ کا یوم پاکستان کی تقریب سے خطاب

ماسکو(شاہد گھمن سے) یوم پاکستان کی مناسبت سے سفارت خانہ پاکستان ماسکو کے زیر اہتمام روس میں تعینات مختلف ممالک کے سفارتخاروں کے اعزاز میں ایک پروقارعشائیہ کا اہتمام کیا گیاجس کے مہمان خصوصی پاکستان اور افغانستان کیلئے روسی صدر کے نمائندے ضمیر کابلوف تھے جبکہ پاکستانی سفیر قاضی خلیل اللہ نے اس تقریب کی صدارت کی۔ روسی حکومتی نمائندوں ، سفارتکاروں، آل پاکستانیز اوورسیز آرگنائزیشن انٹرنیشنل روس کے صدر خلیل الرحمان ، اوورسیز پاکستان بلوچ یونٹی کے چیئرمین ڈاکٹرجمعہ خان مری سمیت پاکستان کمیونٹی کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔

تقریب کا آغاز تلاوت قرآن پاک سے ہوا جس کے بعد دونوں ممالک کے قومی ترانے پیش کئے گئے.جبکہ اسٹیج سیکرٹری کے فرائض تھرڈ سیکرٹری میڈم وردہ نے سرانجام دئے.

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سفیر پاکستان قاضی خلیل اللہ نے کہا کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیرمیں ہونے والے پلوامہ حملے کا تعلق پاکستان کے ساتھ جوڑنے جیسے بھارتی جھوٹے پراپیگنڈہ کو سختی سے مسترد کرتے ہیںانہوں نے کہا کہ پاکستان بھارت کے ساتھ کشمیر کا مسئلہ مذاکرات کے ذریعے حل کرنا چاہتا ہے پلوامہ حملے کے بعد وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے بھارت کو پیش کش کی اگر اس کے پاس کوئی ثبوت ہیں تو وہ ہمیں آگاہ کرے ،پاکستان اس پر ایکشن لے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک امن پسند ملک ہے اور خطے میں امن چاہتا ہے کیونکہ پاکستان کو دہشتگردی سے سب سے زیادہ نقصان پہنچا ہے لیکن بھارت پاکستان پر الزام تراشیوں کا موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے ممکنہ جنگی صورتحال کو زمہ داری کے ساتھ کنٹرول کیا جس کی عالمی سطح پر پذیرائی اس کے ساتھ ساتھ روس،ترکی،چین ،سعودی عرب اور امریکہ نے بھی اس میں اہم کردار ادا کیا۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے تقریب کے مہمان خصوصی روسی صدرکی جانب سے پاکستان اور افغانستان کیلئے مقرکردہ نمائندے ضمیر کابلوف نے کہا کہ روس اور پاکستا ن کے تعلقات تیزی سے آگے بڑھ رہے ہیں اور روس ان تعلقات کو عزت کی نگاہ سے دیکھتا ہے انہوں نے کہا کہ پاکستان اور روس کے بڑھتے ہوئے تعلقات کے پیش نظر ہمارے لیڈران کی ملاقاتیں جاری ہیں اور ان چند سالوں میں ہمارے تعلقات میں بہتری آئی ہے اور ہماری تجارت میں بھی اضافہ ہو رہا ہے انہوں نے کہا کہ روس خطے میں امن کیلئے کوشاں ہے اور ہم مستقبل میں پاکستان کے ساتھ اچھے اور مضبوط تعلقات دیکھ رہے ہیں ۔ تقریب کے اختتام پر سفیر پاکستان قاضی خلیل اللہ اور ضمیر کابلوف نے یوم پاکستان کا کیک بھی کاٹاجس کے بعد مہمانوں کی پرتکلف روائتی کھانوں سے تواضع کی گئی ۔

 

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں