123

کویت میں ساڑھے پانچ ہزار سے زائد غیر مُلکی سرکاری ملازمتوں سے فارغ

کویت( ورلڈ پوائنٹ) کویت کے سول سروس کمیشن کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ رواں سال حکومت کی جانب سے مختلف سرکاری شعبوں میں سے اب تک اڑھائی ہزار کے قریب غیر مُلکی فارغ کیے جا چکے ہیں جن کی جگہ کویتی باشندوں نے لے لی ہے۔ کمیشن کی جانب سے مزید بتایا گیا ہے کہ گزشتہ سال بھی 3,150 غیر مُلکیوں کو ملازمت سے فارغ کیا گیا تھا۔ اس طرح مجموعی طور پر 5600 سے زائد غیر مُلکی سرکاری نوکریوں سے برخاست کیے جا چکے ہیں اور اُن کی جگہ گریجوایٹ کویتی نوجوان مرد اور خواتین کو نوکریاں دی گئی ہیں۔

حکومت کی جانب سے بنائی گئی ایک کمیٹی کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ ابھی بھی مملکت کے مختلف سرکاری شعبوں میں 80 ہزار سے زائد غیر مُلکی براجمان ہیں، جن میں سے زیادہ ترمحکمہ تعلیم اور محکمہ صحت میں اُونچے عہدوں پر تعینات ہیں۔

کمیٹی کی جانب سے مختلف حکومتی عہدے داروں سے ملاقات بھی کی گئی ہے جس میں اس بات پر زور دیا گیا ہے کہ مملکت میں مقامی بے روزگاروں کی تعداد کو مدنظر رکھتے ہوئے حکومتی شعبوں میں کم از کم آٹھ ہزار ملازمتیں مہیا کی جائیں۔

واضح رہے کہ فروری 2019ءمیں کویتی وزارت داخلہ کے سیکرٹری جنرل عصام النہام نے وزارت کے تمام ذیلی اداروں کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے ہاں موجود غیر ملکیوں کو نوکریوں سے برخاست کر کے ان کی جگہ کویتی شہری بھرتی کریں۔وزارت کے ترجمان کے مطابق اس ہدایت پر عمل درآمد کرتے ہوئے فوری طور پر 50غیر ملکیوں کے معاہدے منسوخ کر دیئے گئے ہیں۔ ترجمان کے مطابق اداروں کے سربراہان نے کچھ روز قبل ان غیر ملکیوں کے ناموں کی فہرست طلب کی تھی، جن کی جگہ کویتی شہریوں کو بھرتی کیا جا سکتا ہے تاہم اداروں کے سربراہان نے ایسی فہرستیں فراہم کرنے سے انکار کرتے ہوئے یہ موقف اختیار کیا تھا کہ اس سے سینکڑوں غیر ملکیوں کا رزق چھن جائے گا۔

جس پر وزارت داخلہ کی سیکرٹری نے دوبارہ سختی سے ہدایت جاری کی کہ فہرستوں کا انتظار کیے بغیر ہی غیر ملکیوں کو نوکری سے نکال باہر کیا جائے اور ان کی جگہ شہریوں کو بھرتی کیا جائے۔ واضح رہے کہ اس وقت تمام حکومتی اداروں میں غیر ملکیوں کی جگہ مقامی افراد کو نوکریاں دینے کی پالیسی پر عمل درآمد کیا جا رہا ہے۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں