160

یورپی یونین انتخابات، مرکزی جماعتیں اکثریت حاصل کرنے میں ناکام

برسلز(ورلڈ پوائنٹ) یورپی یونین کے انتخابات میں مرکزی جماعتیں اکثریت حاصل کرنے میں ناکام ہوگئیں، یورپی پارلیمنٹ کے انتخابات کے نتائج میں یوروسیپٹک اور گرین پارٹی نے زیادہ ووٹ حاصل کرلیے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یورپی یونین کے انتخابات میں 751 نشستوں پر مشتمل پارلیمنٹ میں مرکزی جماعتیں یوروسیپٹک، کنزرویٹو اور نیشنلسٹ جماعتوں کی جانب سے چیلنج کے بعد اپنی مشترکہ اکثریت حاصل کرنے میں ناکام ہوگئیں۔

انتخابات میں گرینز اینڈ ریجنل پارٹیز نے یورپ کے بڑے ممالک سے کامیابی حاصل کی اور لبرلز اور سینٹرلسٹ پارٹی کی جانب سے دو جماعتوں کے ہمراہ مستقبل میں پارلیمانی اتحاد میں اہم کردار ادا کرنے کا امکان ہے۔

فرانسیسی صدر ایمانویل میکرون کی انقلابی تحریک سے ابھر کر سامنے آنے والی جماعت لبرل اے ایل ڈی اے گروپ 100 سے زائد نشستیں حاصل کرلے گی جس کے بعد یورپی کمیشن کی صدارت کے لیے مارگریٹ ویستاگر کی جیت کے لیے کوششیں زور پکڑنے کے امکانات ہیں۔

برطانیہ کی جانب سے یوروسیپٹک جماعت کے ارکان یورپی پارلیمنٹ کا حصہ بنیں گے جبکہ وہ آئندہ چند ماہ میں یورپی یونین سے علیحدہ ہوجائے گا۔

میگل فراج کی بریگزٹ پارٹی نے مرکزی جماعتوں کو پیچھے چھوڑ دیا جبکہ سالوینز لیگ، اٹلی کی سب سے بڑی جماعت اور نیشنل ریلی میکرون سے آگے تھی۔

رپورٹ کے مطابق 1979 میں یورپی یونین کے پہلے انتخاب سے لے کر اب تک ٹرن آؤٹ میں کمی آتی رہی ہے لیکن یونین میں شامل 28 ممالک کے اعدادو شمار کے مطابق 51 فیصد ٹرن آؤٹ 20 سال کی تاریخ میں سب سے زیادہ ہے۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں