89

جعلی اکاؤنٹس کیس ، نیب نے سابق صدر آصف زرداری کو گرفتار کرلیا

اسلام آباد (ورلڈ پوائنٹ) نیب ٹیم نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف زرداری کوگرفتار کرلیا ، اسلام آباد ہائی کورٹ نے آصف زرداری کی درخواست ضمانت مسترد کردی تھی۔

تٍفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ کی جانب سے ضمانت درخواست مسترد ہونے پر سابق صدر آصف زرداری کی گرفتاری کے لیئے 5 افسران سمیت نیب کی ٹیم زرداری ہاؤس پہنچی، نیب ٹیم میں ڈائریکٹر نیب شیخ شعیب،ڈپٹی ڈائریکٹر نیب اسد جنجوعہ ، ڈپٹی ڈائریکٹر نیب عدنان بٹ،مصطفیٰ خان اور آصف خان شامل تھے۔

نیب نے آصف زرداری کی گرفتاری کیلئے 3مختلف ٹیمیں روانہ کیں ، نیب کی پہلی ٹیم آصف علی زرداری کے گھر پہنچی جبکہ دوسری ٹیم پارلیمنٹ روانہ ہوئی تھی، اسپیکر قومی اسمبلی کو نیب کی جانب سے تحریری آگاہ کر دیا گیا۔

نیب ذرائع کے مطابق فریال تالپور کے وارنٹ گرفتاری ابھی جاری نہیں ہوئے ، نیب ٹیم وارنٹ ہونے پر صرف آصف زرداری کوگرفتار کرےگی، گرفتاری کیلئے نیب ٹیم ، آصف زرداری کے وکلا میں بحث جاری ہے ، آصف زرداری کے وکلا کا مطالبہ ہے ہائی کورٹ کےتحریری احکامات دکھائیں۔

اس موقع پر زرداری ہاؤس کے اطراف سیکیورٹی سخت کردی گئی جبکہ پولیس کی مزید نفری پہنچی تھی ، سخت سیکیورٹی کے باعث زرداری ہاؤس آنے والے راستے بھی بند کردیئے گئے۔

نیب نے سابق صدر آصف زرداری کو گرفتار کرلیا، جس کے بعد نیب ٹیم آصف زرداری کولیکر زرداری ہاؤس سے روانہ ہوگئی۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں