170

یورپی یونین: وزیر اعظم کی تبدیلی سے بریگزٹ تبدیل نہیں ہو گا

برسلز(ورلڈ پوائنٹ) یورپی یونین نے کہا ہے کہ برطانیہ میں وزیر اعظم کی تبدیلی سے بریگزٹ سمجھوتہ تبدیل نہیں ہو گا۔یورپی یونین کونسل کے ترجمانِ اوّل مارگاریٹس سکینس نے معمول کی پریس کانفرنس میں کنزرویٹیو پارٹی کی چئیر مین شپ اور وزارت اعظمیٰ کے امیدوار بورس جانسن کے بیان سے متعلق سوال کا جواب دیا ہے ۔

بورس جانسن کے اس بیان کے جواب میں کہ وہ اس سے قبل کے وعدوں کی وجہ سے یورپی یونین کو تقریباً 40 بلین سٹرلن علیحدگی مالیت ادا نہیں کریں گے سکینس نے کہا ہے کہ” مذاکراتی میز پر طے پانے والے سمجھوتے کو سب جانتے ہیں۔ تمام رکن ممالک کی منظوری کے حامل بریگزٹ سمجھوتے کا وزیر اعظم کی تبدیلی کے ساتھ تبدیل ہونا موضوع بحث نہیں ہے”۔

انہوں نے کہا ہے کہ یورپی یونین برطانیہ میں جاری سربراہی دوڑ میں مداخلت نہیں کرے گی۔واضح رہے کہ برطانیہ کی وزیر اعظم تھریسا مے کے مستعفی ہونے کے بعد کنزرویٹو پارٹی کی قیادت کے لئے درخواست دینے کی مہلت سوموار کی شام ختم ہو گئی ہے۔ پارٹی قوانین کے مطابق 8 اسمبلی ممبران کی حمایت کے بعد باقاعدہ درخواست دینے والے امیدواروں کی تعداد 10 ہے۔

یہ امیدوار پہلے 13 جون کو پارٹی کے زیریں اسمبلی گروپ میں متوقع انتخابات لڑیں گے اور کم از کم 17 اسمبلی ممبران کی حمایت حاصل کرنے والے امیدواروں کے درمیان 17 جون کو متوقع دوسرے راونڈ میں مقابلہ ہو گا۔

دوسرے راونڈ میں امیدواروں کا کم از کم 33 اسمبلی ممبران کا ووٹ حاصل کرنا ضروری ہو گا۔دو امیدواروں کو اسمبلی ممبران کی بھاری اکثریت حاصل نہ ہونے کی صورت میں باقی ماندہ امیدواروں کے درمیان 19 اور 20 جون کو مذکورہ سے مشابہ انتخابات کروائے جائیں گے۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں