190

وزیراعظم عمران خان شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس میں شرکت کرنے کے لیے کرغستان کے شہر بشکیک پہنچ گئے

بشکیک(شاہد گھمن سے) وزیراعظم عمران خان شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس میں شرکت کرنے کے لیے کرغستان کے شہر بشکیک پہنچ گئے۔ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اچھی اور اور وزیراعظم کے معاون خصوصی عثمان ڈار بھی ان کے ہمراہ ہیں
بشکیک ایئرپورٹ پر ان کا استقبال کرغستان کے وزیراعظم محمد کالی ابلگازیف اور وزیر صحت کوسموسبک نے کیا۔ جبکہ سفارتخانہ پاکستان بشکیک میں تعینات سفیر پاکستان محمد فیصل ترمزی بھی ان کے ہمراہ تھے

وزیر اعظم عمران خان شنگھائی تعاون تنظیم کے اجلاس میں شرکت کریں گے جبکہ کل 14 جون کو روسی صدر ولادیمیر پوتن سے ملاقات کریں گے تاہم بھارتی وزیراعظم نریندر مودی سے ملاقات تاحال طے نہیں پاسکی.

اجلاس میں کرغستان کی صدارت میں تنظیم کی کامیابیوں اور مزید پیشرفت کے امکانات کاجائزہ لیتے ہوئے مزید تعاون کے منصوبوں پر گفتگو ہوگی، مالیات، سرمایا کاری، نقل و حمل، توانائی، زراعت کے شعبوں میں رکن ممالک کے درمیان گہرے تعلقات پر بھی خصوصی توجہ رکھی جائے گی۔

اجلاس میں علاقائی روابط کو مضبوط کرنے، منشیات اسمگلنگ کے خلاف کارروائیوں، انفارمیشن ٹیکنالوجی میں تعاون، ماحولیاتی تحفظ ، صحت، کھیل کے شعبوں میں دستاویزات پر دستخظ بھی متوقع ہیں۔
اجلاس میں افغانستان کے معاملے پر بھی گفتگو کی جائے گی، اجلاس میں رکن ممالک کے سربراہان مملکت ،آبزرور ریاستیں اور انٹرنیشنل تنظیمیں شریک ہونگی۔

واضح رہے کہ شنگھائی تعاون تنظیم کے 8 رکن ممالک، 4آبزرور ریاستیں اور 6 ڈائیلاگ پارٹنرز ہیں، رکن ممالک میں چین، بھارت، قازقستان، کرغستان، پاکستان ، روس، تاجکستان اور ازبکستان شامل ہیں۔

شنگھائی تعاون تنظیم یورپ اور ایشیائی ملکوں پر مشتمل سیاسی، اقتصادی اور عسکری تعاون کی ایک تنظیم ہے جسے 2001 میں چین، قازقستان، کرغزستان، روس اور تاجکستان نے شنگھائی میں قائم کیا تھا۔ بعد ازاں اس میں ازبکستان کو بھی شامل کر لیا گیا۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں