140

مریم نواز احتساب عدالت کے جج کی مبینہ ویڈیو سامنے لے آئیں

لاہور(ورلڈ پوائنٹ) مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کی مشترکہ پریس کانفرنس میں مریم نواز احتساب عدالت کے جج کی خفیہ کیمرے سے بنی مبینہ ویڈیو سامنے لے آئیں، ان کا کہنا ہے کہ غیبی مدد سے شواہد ملے ہیں۔

مسلم لیگ ن کےرہنماشہبازشریف اورمریم نواز نے پریس کانفرنس میں کہا ہے کہ ٹھوس اور بھرپور شواہد ملے ہیں۔ انہوں نے احتساب عدالت کے جج کی ایک مبینہ ویڈیو پریس کانفرنس میں چلائی ، جس کے بارے میں مریم نواز کا دعویٰ ہے کہ وہ نواز شریف کے ایک چاہنے والے نے بنائی ہے۔

مریم نواز کا کہنا تھا کہ تاریخ میں پہلی مرتبہ کسی وزیراعظم کی بیٹی کوبھی عدالت اورپھرجیل جاناپڑا،یہ نہیں کہ ہم ثبوت پیش نہیں کرسکے،ہم نےثبوت پیش کیےمگرمانےنہیں گئے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نےہرچیزکاثبوت پیش کیالیکن انہیں تسلیم نہیں کیاگیا۔

لاہور: مسلم لیگ ن کی قیادت کی نیوز کانفرنس

لاہور: مسلم لیگ ن کی قیادت کی نیوز کانفرنس

Gepostet von ARY News am Samstag, 6. Juli 2019

مریم نواز کی جانب سے جاری کردہ احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی مبینہ ویڈیو میں کہا جارہا ہے کہ نوازشریف کےساتھ زیادتی اورناانصافی ہوئی۔ یہ مبینہ ویڈیو جج ارشد ملک اور ناصر بٹ نامی شخص کی ہے۔

مریم نواز نے کہا ہے کہ جج احتساب عدالت کہتےہیں الزامات کےثبوت ہیں نہ شواہد،ناصربٹ کی جج احتساب عدالت ارشدملک سےپرانی جان پہنچان ہے۔جج ارشدملک نےناصربٹ نےکہافیصلےکےبعدمیراضمیرملامت کرتاہے۔جج ارشدملک نےکہا میں چاہتاہوں حقیقت نوازشریف کےوکلاتک پہنچے۔

مریم نواز کے مطابق جج ارشدملک نےناصربٹ کوکہاآپ میرےسےکہیں باہرملیں،ناصربٹ نےکہاجب ملنےجارہاتھاتوجج ارشدملک کاراستےمیں فون آیا،ناصربٹ کےمطابق جج ارشدملک نےکہا آپ میرےگھرآجائیں۔ناصربٹ نےجج ارشدملک سےپوچھاآپ کاگھرکہاں ہےمجھےمعلوم نہیں،ناصربٹ کےمطابق جج ارشدملک نےگھرکاپتہ سمجھااوران سےملنےچلاگیا۔

مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز کے مطابق ملاقات میں جج ارشدملک نےناصربٹ کوکہا کہ ثبوتوں میں فیملی بزنس کےثبوت ہی نہیں ہیں، جج ارشدملک کہتےہیں کہ ٹیکس ریٹرن،ایف بی آرفارم کاثبوت نہیں دیاگیا۔جج صاحب کہتےہیں نیب کاکوئی بھی افسرثبوت جمع کرنےگیاہی نہیں ہے،جج صاحب کہتےہیں ایف بی آرکافارم اٹھاکرمکمل کیس بنادیاگیا، حسین نوازکاپاکستان میں کوئی بزنس نہیں ہے۔

مریم نواز نے یہ بھی کہا کہ ذوالفقاربھٹوکیس میں کئی سال بعدججوں نےکہادباؤمیں فیصلہ کیا۔ شکرہےنوازشریف کیس میں سیاہی خشک نہیں ہوئی کہ جج بول پڑے۔

ان کا کہناتھا کہ نوازشریف نےملک کی خاطرخاموشی سےجیل جاناپسندکیا۔نوازشریف نےجانتےہوئےبھی کہ انتقام ہےقانون کےسامنےسرجھکایا۔نوازشریف سزاسننےکےباوجودبیرون ملک سےواپس آئے۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں