123

مودی حکومت نیتن یاہو کی پالیسی پر عمل پیرا ہو کر کشمیریوں کی نسل کشی کر رہی ہے،ڈاکٹرجمعہ خان مری چیئرمین اوورسیزپاکستان بلوچ یونٹی روس

ماسکو انٹرویو: شاہد گھمن
اوورسیز پاکستان بلوچ یونٹی ماسکو کے چیئرمین ڈاکٹر جمعہ خان مری ،صدر ملک شہبازاور چوہدری زاہد خورشید نے ”ورلڈ پوائنٹ” کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ مودی حکومت نیتن یاھو کی پالیسی پر عمل پیرا ہو کر کشمیریوں کی نسل کشی کر رہی ہے۔ مودی حکومت ایک ہندو شدت پسند حکومت ہے انہوں نے اسی بنیاد پر حکومت بنائی ہے وہ پورے بھارت کو صرف ہندو مذہب کی میراث سمجھتے ہیں کشمیر سمیت پورے بھارت میں کسی اقلیت کو اس کے مذہب کے مطابق زندگی گزارنے کا حق حاصل نہیں ہے۔

ڈاکٹر جمعہ خان مری نے کہا کہ2008سے کشمیری نوجوان بندوق کا راستہ چھوڑ کر آزادی کے لیے پرامن سیاسی جدوجہد کر رہے تھے۔ لیکن بھارت میں بی جی پی کے اقتدار میں آنے پر جس طرح پورے انڈیا میں ہندو شدت پسندی اور مسلمانوں کے خلاف شدت پسندانہ اقدامات میں اضافہ ہوا ہے۔ اسی طرح کشمیر میں بھی آزادی کی بات کرنے والے پر عرصہ حیات تنگ کر دی گی ہے نوجوانوں کو ٹارچر سیلوں میں لے جاکر بے پناہ تشدد اور ماروائے عدالت قتل کیا جارہا ہے ۔مودی حکومت نے آرٹیکل370کا خاتمہ کرکے دو ایٹمی ممالک کو جنگ کے دہانے پر کھڑا کر دیا ہے۔ڈاکٹر جمعہ خان نے تمام ممالک سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ انصاف کے تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے کشمیریوں کو ان کے بنیادی حقوق حق خودارادیت دلوانے میں اپنا کردار ادا کریں۔

صدر اوورسیز پاکستان بلوچ یونٹی ملک شہباز کا کہنا تھا کہاس وقت مقبوضہ وادی میں کرفیو جیسی صورتحال ہے رشیا سمیت پوری دنیا میں بسنے والے کشمیری انٹرنیٹ سروس بند ہونے کی وجہ سے اپنے گھروں میں رابطہ نہیں کر پا رہے ہیںاور وہاں پر خوراک اور ادویات کی کمی ہو چکی ہے بھارت ہر روز لائن آف کنٹرول پر فائر کر کے آزاد کشمیر میں نہتے شہریوں کو شہید کر رہا ہے اس محاذ پر ہماری پاکستانی فوج اس کا بھرپور جواب دے رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ کسی انٹرنیشنل ادارے کو مقبوضہ وادی کی طرف نہیں جانے دیا جاتا ہے بھارت طاقت کے ساتھ تحریک آزادی کشمیر کو کچلنے کی کوشش کر رہا ہے لیکن تاریخ گواہ ہے کسی کی آزادی کو زیادہ دیر تک سلب نہیں کیا جا سکتا۔تحریک آزادی کشمیر نریندر مودی کے اس اقدام سے آخری مرحلے میں داخل ہوگئی ہے بہت جلد ہمارے کشمیری بھائی بھی ہندوستان سے آزادی لے کر اپنی مرضی کی آزاد زندگی گزار سکیں گے ہم ہر محاذ پر کشمیریوں کی مکمل سپورٹ کریں گے اور کشمیریوں کے لیے ہر طرح کی قربانی دینے کو تیار ہیں۔

رہنما اوورسیز پاکستان بلوچ یونٹی چوہدری زاہدخورشید کا کہنا تھا کہ بی جی پی کی اس شدت پسندی کے ردعمل میں کشمیر کے پڑھے لکھے نوجوان نے آج دوبارہ بندوق اٹھالی ہے اور دن بدن مودی حکومت کی مشکلات میں اضافہ ہوتا جا رہا تھا۔ مودی اپنی شدت پسندانہ ذہن کے مطابق اس تحریک کو اپنی فوجی طاقت اور سیکورٹی فورسز سے کچلنا چاہتا ہے انہوں نے کہا کہ میں بطور اوورسیز پاکستانی اور اپنے دیگر اوورسیز پاکستانی بھائیوں کی طرف سے کشمیر میں ان کی سیاسی لیڈر شپ اور حریت رہنمائوں اور پڑھے لکھے کشمیری نوجوانوں کو یہ پیغام دینا چاہتا ہوں کہ وہ سب ایک پلیٹ فارم پر اکٹھے ہو کر اپنی آزادی کی تحریک کو جاری رکھیں۔ ہم برہان وانی سمیت تمام کشمیری نوجوانوں کی شہادت کو رائیگاں نہیں جانے دینگے گے اورانشااللہ بہت جلد ”کشمیر بنے گاپاکستان”۔

اوورسیز پاکستان بلوچ یونٹی کے رہنمائوں کا کہنا تھا کہ ہماری تنظیم دنیا بھر میں کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کے لئے آواز بلند کرنے میں اپنا کردار ادا کرتی رہے گی۔نریندر مودی کے اس اقدام سے کشمیر کی آزادی کی منزل انتہائی قریب آگئی ہے۔ پاکستانی حکومت اور عوام آپ کی ہر سطح پر سفارتی اور اخلاقی حمایت پہلے بھی کرتے رہے ہیں اور اب بھی اس سے پیچھے نہیں ہٹیں گے۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں