91

روس کے شہر اورنگبرگ میں شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) و روسی فیڈریشن کے زیر اہتمام مشترکہ فوجی مشقیں ٹی ایس این ٹی آر (سنٹر) 2019 کا آغازہوگیا

اورنگبرگ(شاہد گھمن سے) روس کے شہر اورنگبرگ میں شنگھائی تعاون تنظیم (ایس سی او) و روسی فیڈریشن کے زیر اہتمام مشترکہ فوجی مشقیں ٹی ایس این ٹی آر (سنٹر) 2019 کا آغازہوگیاجس میں میزبان روس کے علاوہ چین ، پاکستان ، قازقستان ، کرغزستان ، تاجکستان ، ازبکستان اور ہندوستان کے فوجی دستے ان بین الاقوامی مشقوں میں حصہ لے رہی ہیں، مشترکہ فوجی مشقوں کی افتتاحی تقریب میں تمام شریک ممالک کے سینئر فوجی عہدیداروں نے شرکت کی۔ اس پروگرام کے مہمان خصوصی لیفٹیننٹ جنرل یوکوروف ڈپٹی ڈیفنس منسٹر روشین فیڈریشن تھے

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان آرمی فورس کے دستہ کے کمانڈر بریگیڈئیر ممتاز علی نے کہا کہ میرے لئے یہ بڑے اعزاز کی بات ہے کہ میں مشترکہ فوجی مشقیں ٹی ایس این ٹی آر (سنٹر) 2019 میں اسلامی جمہوریہ پاکستان کی قیادت کر رہا ہوں انہوں نے کہ پاکستان اور اس کی افواج ہمیشہ علاقائی امن و سلامتی اور استحکام کیلئے اپنا کردار ادا کرنے کیلئے بے چین رہتے ہیں انہوں نے کہاکہ ہمیں یہ اعزاز حاصل ہے کہ ہم نے 15 سال سے زائد عرصہ تک دہشتگردی سے ڈٹ کر مقابلہ کیا ہمارے پاس تجربہ بھی ہے اور دہشتگردی گردی کو ختم کرنے کی صلاحیت بھی ہے

بریگیڈیئر ممتازعلی نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ ہم ان مشترکہ فوجی مشقوں سے استفادی حاصل کریں گے ہم ایک دوسرے کے تجربات سے سیکھیں گے بالخصوص دہشتگردی اور انتہاپسندی کے خاتمے کیلئے سب کو سیکھنے کا موقع ملے گا. انہوں نے ان مشترکہ فوجی مشقوں کے انعقاد پرروسی حکومت کا شکریہ اداکیا اورآخر میں پاک روس دوستی زندہ بادکا نعرہ لگایا.

A joint exercise ‘TSENTR (Centre) 2019 hosted by Russian Federation under the ambit of Shanghai Cooperation Organization (SCO

روسی شہر اور نگبرگ میں شنگھائی تعاون تنظیم اور روسی فیڈریشن کے زیرِ اہتمام مشترکہ فوجی مشقیں، پاکستان آرمی کے فوجی دستے کی شرکت، ماسکو سے رپورٹ کر رہے ہیں نمائندہ 92 نیوز شاہد گھمن

Gepostet von 92 News Russia am Montag, 16. September 2019

روس میں جاری مشترکہ فوجی مشقوں کی افتتاحی تقریب میں پاکستانی فوجی دستے کی قومی پرچم تھامے اللہ ہو کی بلند آوازوں سے زبردست اندازمیں انٹری ہوئی.

ایس این ٹی آر (سنٹر) 2019 مشترکہ فوجی مشقوں کا مقصد بین الاقوامی دہشت گردی کے خلاف جنگ میں شریک فوجوں کی مشترکہ طورپرتربیت کرنا ہے جس سے خطے میں سلامتی اور استحکام کو یقینی بنایا جاسکے جبکہ مطلوبہ مہارتوں کے حصول اور شریک افواج کے مابین انٹر آپریبلٹی اور ہم آہنگی کی سطح کو بڑھانے پر توجہ دی جائے گی.یہ فوجی مشقیں 16 ستمبر تا 21 ستمبر تک جاری رہیں گی

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں