33

جدہ، لڑکوں‌ کو چھیڑنے پر پاکستانی خواتین گرفتار

جدہ(ورلڈ پوائنٹ) سعودی عرب کے شہر جدہ میں لڑکوں سے چھیڑ چھاڑ کرنے والی پاکستانی لڑکیوں کو گرفتارکرلیا۔ سعودی اخبار کی رپورٹ کے مطابق جدہ پولیس نے اسنیپ چیٹ ویڈیو اور سی سی ٹی وی فوٹیجز کی مدد سے پاکستانی لڑکیوں کو گرفتار کرلیا، دونوں لڑکیوں پر اپنی گاڑی میں بیٹھ کر ورزش کرنے والے نوجوانوں کو چھیڑنے اور ان پر جملے کسنے کا الزام ہے۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ گرفتاری کا گرین سگنل ملنے کے بعد مذکورہ لڑکی کو مدائن کے علاقے سے اس وقت حراست میں لے لیا جب وہ اپنی سہیلی کے ساتھ بیوٹی پارلر سے نکل رہی تھی، دونوں لڑکیاں بیوٹی پارلر میں ہی کام کرتی ہیں۔

اسنیپ چیٹ پر شیئر ہونے والی ایک ویڈیو میں گرفتار پاکستانی لڑکی کو لڑکوں پر جملے کستے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے، لڑکی کی اس حرکت پر صارفین کی جانب سے جدہ پولیس کو اسے گرفتار کرکے قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہ کیا تھا۔

جدہ پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکیوں نے اسنیپ چیٹ پر ویڈیو جاری کی جس میں سوشل میڈیا صارفین اور سعودی عوام سے اپنے عمل کی معافی مانگی ہے۔

سعودی عرب کے قوانین میں چھیڑ خانی کی سزا پانچ سال قید اور ایک لاکھ ریال جرمانہ ہے، تاہم یہ ابھی واضح نہیں ہوسکا ہے کہ پولیس نے لڑکیوں کو معافی مانگنے کے بعد رہا کردیا ہے یا ان پر قانون کے تحت مقدمہ چلایا جائے گا۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں