158

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے متوقع دورہ بھارت پر مکمل نظر رکھیں گے اور ہم چاہیں گے کہ دونوں ممالک اپنی خارجہ پالیسی اور بین الاقوامی قوانین پر عملدرآمد کریں، ماریہ زخارووا

ماسکو(شاہد گھمن سے) روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریہ زخارووا نے اپنی ہفتہ واربریفنگ میں مشرق وسطیٰ سمیت یورپ، امریکہ اورفغانستان کے حوالے سے مختلف خارجہ امورپرروسی اور بین الاقوامی صحافیوں کوتفصیلی بریفنگ دی انہوں نے چائنہ میں کوروناوائرس کے حوالے سے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم چین میں تعینات اپنے سفیروں سے مسلسل رابطے میں ہیں اور اپنے روسی شہریوں کیلئے عملی اقدامات کر رہے ہیں.

انہوں نے افغانستان صدارتی انتخابات کے حتمی نتائج کے اعلان جس کے مطابق موجودہ صدر اشرف غنی کو فاتح قرار دیا گیاہے کو متنازعہ قراردیتے ہوئے کہا کہ روس کو افغانستان میں صدارتی انتخابات کے متنازعہ نتائج کی صورتحال پر تشویش ہے جس سے افغانستان کے امن عمل پر منفی اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم تعمیری جذبے سے ملک کی سیاسی قوتوں سے گزارش کرتے ہیں کہ ایسی صورتحال سے نکلنے کا کوئی ایسا راستہ تلاش کیا جائے جو افغان عوام کے مفادات کو پورا کرے اور افغانستان میں دیرپا امن کے قیام کو یقینی بنائے۔

ماریہ زخارووا نے چیف ایڈیٹر “ورلڈ پوائنٹ” شاہد گھمن کی جانب سے پوچھے گئے سوال امریکی صدر کا متوقع دورہ بھارت کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ہم امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے متوقع دورہ بھارت پر مکمل نظر رکھیں گے اور ہم چاہیں گے کہ دونوں ممالک اپنی خارجہ پالیسی اور بین الاقوامی قوانین پر عملدرآمد کریں انہوں نے کہا کہ ہم اس دورہ کے نتائج کا انتظارکریں گے اور اس پر مزید تبصرہ بھی کریں گے

ماریہ زخارووا نے چیف ایڈیٹر “ورلڈ پوائنٹ” کے دوسرے پوچھے گئے سوال طالبان اور امریکہ امن معاہدہ کے بارے میں جواب دیتے ہوئے کہا کہ امریکہ افغانستان سے فوجی انخلا کی باتیں کافی عرصے سے کررہا ہے لیکن امریکہ کہتا کچھ ہے اور کرتا کچھ اور ہے اسی لئے طالبان اور امریکہ کے درمیان امن معاہدے سے پہلے ہم امریکہ کے کسی بیان کو سنجیدگی سے نہیں لے سکتے .

Press briefing of Maria Zakharova spokeswoman of ministry of foreign affairs Russia 20-02-2020

Press briefing of Maria Zakharova spokeswoman of ministry of foreign affairs Russia…. She answered questions of Shahid Ghumman correspondent of 92 News Russia. 20-02-2020

Gepostet von 92 News Russia am Sonntag, 23. Februar 2020

انہوں نے کہا کہ امریکہ کے ماضی سے متعلق حقائق اور اس ملک کی قیادت کی جانب سے اپنے دستوں کو افغانستان سے واپس بلانے کے متعلق بیانات سب کے سامنے ہیں جن پر بھروسہ نہیں کیا جاسکتا کیونکہ اپنے بیانات کو مستقل طور پر بدلنے کی واشنگٹن کی قومی روایت ہے۔ ماریہ زخارووا کا مزید کہنا تھا کہ اگر طالبان اور امریکہ معاہدے تک پہنچ جاتے ہیں تو پھر ان کے معاہدوں کے نتائج کو دیکھنا ضروری ہوگا اور پھر مناسب نتائج اخذ کریں گے۔

Maria Zakharova Shahid Ghumman

ماریہ زخارووا کی پریس بریفنگ کے بعد چیف ایڈیٹر ورلڈ پوائنٹ و نمائندہ 92 نیوز شاہد گھمن کے پاکستان سے خصوصی طور پر لائی ہوئی کشمیری شال بطور تحفہ پیش کی جسے ماریہ زخارووا نے بہت پسند کیا اور اسے اوپر اوڑھ کر خوشگوار موڈ میں تصویر بھی بنوائی انہوں نے نمائندہ 92 نیوز کا اس تحفے پرشکریہ ادا کیا.

روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریہ زخارووا کشمیری شال اوڑھ کرفارن آفس میں دیگر افراد سے ملتے ہوئے

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں