108

پرچہ پولیٹیکل سائنس – مرسلان حیدر

پرچہ پولیٹیکل سائنس
(کل نمبر 80 – وقت 3 گھنٹے)
بہار – 2018 (9 جولائی بروز پیر)
شعبہ قانون – جامعہ اتفاق، شاہراہ عدلیہ،

نوٹ:

1۔ تمام سوالات حل کریں۔

2- سوالات کے نمبر مساوی ہیں

سوال نمبر 1:

(الف) اگر ایک حکمران 70 سال میں سے (آخری) تیس سال ایک ملک پر حکومت کرے اور پھر بیان دے کہ “پاکستان کے حالات کی وجہ ستر سالہ کرپشن ہے”۔ اس بیان کے تناظر میں، نا اہل حکمران کی تعریف اور خصوصیات واضح کریں۔

(ب) اگر مندرجہ بالا حکمران کا اپنا چینی، پولٹری اور صنعتی کاروبار ان تیس سالوں میں ترقی کی انتہا کو پہنچ گیا ہو تو کیا یہ نتیجہ اخذ کیا جا سکتا ہے کہ اس کے کاروبار کی ترقی کی وجہ بد عنوانی ہی ہے اور اسی وجہ سے اس نا اہل حکمران نے بد عنوانی کی بیخ کنی نہیں کی؟ بحث کیجیئے۔ (5+5)

سوال نمبر 2:

(الف) Liberal Democracy کی تعریف اور انیس سو تہتر کے آیئن کی شق 8 تا 28 کو سامنے رکھتے ہوئے دلائل دیجیے کہ کیا پاکستان ایک Hybrid Regime ہے؟

(ب) پاکستان کو Hybrid Regime کے درجے پر پہنچانے والے ان جمہوری حکمرانوں پر جامع مگر مختصر تجزیہ پیش کیجئے جنہوں نے مہاراجہ رنجیت سنگھ کے بعد پنجاب (60٪ پاکستان) پر سب سے زیادہ حکومت کی۔ (5+5)

سوال نمبر 3:

(الف) اگر قوم کے ٹیکس پر پلنے والا ایک وزیر اپنے کرپٹ قائد کے دفاع کے لیئے صبح چار گھنٹے کمرہ عدالت میں موجود ہوتا ہے، پھر تین گھنٹے میڈیا ٹاک کرتا ہے اور شام کو چھے بجے سے بارہ بجے تک ٹی وی چینلز پر اسی مقصد کے لیئے موجود ہوتا ہے تو آیئن سٹایئن کے نظریہ اضافت کی روشنی میں یہ سمجھایئے کہ اسکے لیئے وقت کی رفتار سپریم کورٹ میں آہستہ ہو گی، میڈیا ٹاک کے دوران یا ٹی وی پر؟

(ب) نواز شریف کے بیان “لوڈشیڈنگ کی ذمہ دار نگران حکومت ہے”، شہباز شریف کا بھی اپنے دس سالہ مسلسل دور حکومت کے بعد اپنے آپ کو بارش کے بعد کی صورتحال سے مبرا ٹھہرانا، اس قسم کی دوسری مثالیں اور “Probability Theory” کو سامنے رکھتے ہوئے واضح کیجیے کہ اس کا کتنا امکان ہے کہ مسلم لیگ ن کے راہنما کبھی اپنی ناکامی کی ذمہ داری اپنی نااہلی پر نہیں لیں گے؟ (5+5)

سوال نمبر 4:

(الف) اگر ایک صوبے پر تین دہایئاں حکومت کرنے والی جماعت، ن لیگ، اس پی ٹی آئی سے جس نے کے پی کے پر 5 سال حکومت کی ہو، سے مقابلہ کرے اور پھر بھی اداروں میں بہتری ثابت نہ کر سکے تو اس صورت میں نااہلی کی ایک تعریف وضع کیجئے۔

(ب) اگر ایک حکمران جس کے پاس سیاست کا تیس سال کا تجربہ ہو، اپنے منشور میں کیے گئے وعدوں میں سے ایک بھی پورا نہ ہو تو اس صورت میں “نا تجربہ کاری” کی تعریف وضع کیجیے۔ (5+5)

سوال نمبر 5:

(الف) اگر نواز شریف، جے آئی ٹی سے لیکر سپریم کورٹ اور سپریم کورٹ سے لیکر احتساب عدالت تک اپنے اثاثوں کی منی ٹریل ثابت نہ کر سکے تو کیا انکے خلاف فیصلہ آنا، ن لیگیوں’ کے بقول “کسی غیر مرئی قوت جو پاکستان کو نقصان پہنچانا چاہتی ہے، کی سازش ہے” درست ہے؟ Straw Man Fallacy کے تناظر میں وضاحت کیجئے۔

(ب) جہاں پر رائو انوار کے گھر کو جیل قرار دیا جائے اور نواز شریف عدالت میں کیس بھگتنے عوام کے خرچ پر پروٹوکول میں آئے توHasty Generalization کے تناظر میں بحث کیجئے کہ ریاست کے لیئے نواز شریف کو جیل میں ڈالنا مشکل ثابت ہو سکتا ہے جب کہ یہ 90 کی دہائی نہیں، یہ سوشل میڈیا کا دور ہے اور عوام بہت باشعور ہو چکے ہیں اور پاکستان غیر محسوس طریقے سے بہت آگے بڑھ چکا ہے۔

(ج) وضاحت کیجیئے کہ عوام کے خرچے پر پروٹوکول لینے والے اور سڑکیں بند کرنے والے حکمران باہر کے ملکوں کی سڑکوں پر کیوں رلتے ہیں جبکہ اپنے ملکوں میں عوام میں رہنے والے حکمرانوں کو باہر کے ممالک میں پروٹوکول کیوں دیا جاتا ہے؟ نیز حکرانوں کی اس روش کا ملکی خود مختاری پر کیا اثر پڑتا ہے؟ (5+5+5)

سوال نمبر 6:

(الف) اگر نواز شریف نے آج تک ضیاء کا ساتھ دینے اور اسکے مشن کو آگے بڑھانے کے وعدے پر معافی نہیں مانگی تو ان کے اس بیان میں کتنی صداقت ہے کہ “تاریخ کا پہیہ موڑنے کی پاداش میں سزا سنائی گئی”؟ Appeal to Pity کے تناظر میں وضاحت کیجیئے۔

(ب) وہ صحافی حضرات جو نواز شریف کی کرپشن پر کبھی نہیں لکھتے اور انکے ہر دور کے آمر کے ساتھ ساز باز پر بھی چپ رہتے ہیں لیکن ان پر بنے مقدمے میں سازش کا عنصر ڈھونڈتے ہیں؟ کیا انکا نواز شریف کے لیئے رونا دھونا صرف اس لیئے ہے کہ اس بار انکا پسندیدہ لیڈر کرپشن پر پکڑا گیا ہے؟ “گویبلز” کے قول کے “اتنا جھوٹ بولو کہ وہ سچ لگنے لگے” کی روشنی میں وضاحت کریں.

(ج) ن لیگ کی ماضی کی سیاست اور حکومتوں کو مدنظر رکھتے ہوئے واضح کیجیے کہ کیا اسٹیبلشمنٹ نے نواز شریف کا ہر دورمیں ساتھ دیا؟ اگر دیا تو’میٹھا میٹھا ہپ ہپ، کڑوا کڑوا تھو تھو’ کے کلیے کے مطابق واضح کیجیے کہ اس دور میں اسٹیبلشمنٹ کے کردار پر انگلی کیوں نہیں اٹھائی گئی؟ (5+5+5)

سوال نمبر 7:

(الف) اگر کسی کی ذاتی زندگی میں پارسائی جاننے کا کوئی متفقہ پیمانہ نہ ہو، اس صورت میں کیا 1973 کے آیئن کی شق 62، 63 غیر ضروری ہو جاتی ہیں؟ دلائل دیجیئے۔

(ب) کیا سوال نمبر3 والا فرضی وزیر کبھی یہ تمنا کر سکتا ہے کہ اس کے لیڈر کے بچوں کی جگہ وہ وزارت عظمیٰ کا امیدوار بن جائے۔ چوہدری اور میراثی والی کہانی کے تناظر میں وضاحت کریں۔ (5+5)

نوٹ: سوالات کے حوالہ جات موجود ہیں۔ جس طالبعلم کو بھر بھی دشواری کا سامنا ہو تو وہ ممتحن (راقم) سے رابطہ کر سکتا ہے۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں