1,945

فیفا ورلڈ کپ کی آڑ میں روس سے غیر قانونی طورپر یورپ داخل ہونے کی کوشش میں درجنوں پاکستانی گرفتا ر

وہی ہوا جس کا ڈر تھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔پاکستانیوں نے اپنا رنگ دکھا دیا اور پوری دنیا میں پاکستان کا سر شرم سے جھکا دیا

ماسکو(ورلڈ پوائنٹ نیوز) روس میں جاری فیفا ورلڈ کپ کو دیکھنے کیلئے پوری دنیا سے لاکھوں شائقین روس آئے جن میں پاکستانی بھی کافی تعداد میں روس پہنچے ہیں۔ روس نے فیفا ورلڈ کپ دیکھنے کیلئے ویزا کی شرط ختم کر دی تھی اور شائقین فٹبال کی فین آئی ڈی کو ہی ویزہ کا درجہ دے رکھا ہے ۔ فیفا ورلڈ کپ میں استعمال ہونے والا فٹبال پاکستان کا بنا ہونے کی وجہ سے روس سمیت پوری دنیا میں پاکستان کے چرچے ہیں لیکن پاکستانیوں کی اکثریت روس میں میچ دیکھنے کی بجائے روس سے غیر قانونی طریقے سے یورپ جانے کی کوششوں میں مصروف ہے اور اس کے نتیجے میں روس سے غیر قانونی طریقے سے مختلف شہروں سے یورپ داخل ہونے کی کوشش کرتے ہوئے گزشتہ ایک ہفتے میں50کے قریب پاکستانی گرفتارہوچکے ہیں۔

جبکہ ورلڈ پوائنٹ نیوز کو حاصل ہونے والی معلومات کےمطابق روس کے شہر بلگوردسے یوکرائن جانے کی کوشش میں فیصل (پشاور)، اظہر(پشاور)،اشفاق تنولی (ملتان)، تنزلرحمان (کوٹلی آزد کشمیر) جبکہ بیلاروس سے پولینڈ داخلے کی کوشش میں افضل(لاہور)، اویس (لاہور)، مبشر(سیالکوٹ)، نوید (گوجرانوالہ)تبسم علی(کامونکی)،شہباز(لاہور)،علی شاہ (کراچی)،الطاف (کراچی)،صادق (قصور)،انجم علی (قصور)شامل ہیں ۔ ان تمام افراد کی عمریں 20سال سے 50سال تک ہیں ۔

دیگر افراد کی معلومات جونہی موصول ہوتی ہیں ہم اپنے قارئین کو اس سے آگاہ کرتے رہیں گے ۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ایجنٹ مافیا اس گھنائونے کام میں پوری طرح شامل ہے کچھ ایجنٹوں نے پاکستان میں میچز کی ٹکٹیں حاصل کر کے ان پر لوگوں کو یورپ جانے کا جھانسہ دیکر ان کی فین آئی ڈی بنا کر روس بھیجاجبکہ کہ اکثر پاکستانی خود پاکستان سے میچوں کی ٹکٹیں اور فین آئی ڈی بنا کر روس پہنچے اور یہاں سے ایجنٹوں سے رابطہ کر کے غیر قانونی طور پریورپ جانے کی کوشش کی۔

یہ تمام پاکستانی اس وقت روس کی مختلف عارضی قائم کی گئی جیلوں میں قید ہیں اور ان سے تفتیش کی جارہی ہے۔پاکستانیوں کی اکثریت کے پاس پاسپورٹ نہیں ہیں انہوں نے پھینک دیئے ہیں یا کسی کے حوالے کئے ہوئے ہیں۔روس نے پہلے ہی تنبہہ کر دی تھی کے فٹ بال کیلئے آنے والے فینز کسی بھی غیر قانونی سرگرمی میں ملوث ہوئے تو ان سے سختی سے نمٹا جائے گا۔

جبکہ پاکستان ایمبیسی ماسکو نے بھی اپنے پاکستانیوں سے اپیل کی تھی کہ روس میں آنے والے پاکستانی کسی ایجنٹ کے جھانسے میں نہ آئیں اور نہ ہی کوئی ایسی غیر قانونی حرکت کریں جس سے پاکستان کی بدنامی ہو۔

لیکن یہ پاکستانی میچوں سے لطف اندوز ہونے کی بجائے یورپ نکلنے کی کوشش کر تے ہوئے یوکرائن، فن لینڈ، بیلاروس کے بارڈرز پر گرفتار ہوچکے ہیں۔

روس میں مقیم پاکستانی کمیونٹی نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ ان لوگوں کے خلاف پاکستان میں بھی مقدمات قائم کئے جائیں اور پاکستان میں موجود ان ایجنٹوں کے فوری گرفتار کیا جائے جو پوری دنیا میں پاکستان کی بدنامی کا باعث بنے ہیں۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں