389

روس سے غیر قانونی طریقے سے یورپ داخل ہونے کی کوشش کرنے والے مزید پاکستانی پکڑلئے گئے ، زیر حراست پاکستانیوں میں ماں بیٹی بھی شامل

ماسکو، رپورٹ : شاہد گھمن
روس میں جاری فیفا ورلڈ کپ کو دیکھنے کیلئے پوری دنیا سے لاکھوں شائقین روس آئے جن میں پاکستان، ایران، بھارت ،بنگلادیش اور ویت نام سے بھی کافی تعداد میں لوگ فٹ بال ورلڈ کپ کیلئے روس آئے تھے ۔ روس نے فیفا ورلڈ کپ دیکھنے کیلئے ویزا کی شرط ختم کر دی تھی اور شائقین فٹبال کی فین آئی ڈی کو ہی ویزہ کا درجہ دے رکھاتھا ۔جس کی معیاد 25جولائی تھی اور فین آئی ڈی رکھنے والے تمام افراد کو 25جولائی تک روس سے ہر حال میں واپس جانا تھا لیکن اس دوران پاکستانیوں کی اکثریت روس میں میچ دیکھنے کی بجائے روس سے غیر قانونی طریقے سے یورپ جانے کی کوششوں میں مصروف رہی اور اس کے نتیجے میں روس سے غیر قانونی طریقے سے مختلف شہروں سے یورپ داخل ہونے کی کوشش کرتے ہوئے بہت سارے لوگ گرفتار ہوچکے ہیں ۔

گزشتہ روزروس کے شہر بلگورد سٹی سے یوکرائن میں غیر قانونی داخل ہونے والی ایک پاکستانی فیملی کو پکڑا گیا ہے جن میں تین مرد اور ایک ماں بیٹی شامل ہیں ۔” ورلڈ پوائنٹ نیوز” کو ان کے پاسپورٹس کی کا پیز موصول ہو ئی ہیں جن کے مطابق گوجرانوالہ سے تعلق رکھنے والے علی رضا یعقوب ، زمرعبداللہ چیمہ اور جھنگ سے تعلق رکھنے والے سفیر احمد،مقصودہ پروین اور مبشرا ماہم یہ پانچوں افراد آپس میں رشتہ دار بھی بتائے جاتے ہیں یہ اس وقت روس کے شہر بلگورد سٹی کی جیل میں بند ہیں ان کے بارے میں یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ دو عورتوں سمیت یہ پانچوں افرادچند دن پہلے بھی یورپ جانے کی کوشش میں گرفتار ہوئے جس پر روسی پولیس نے عورتوں کے احترام میں ان کو وارننگ دے کر چھوڑ دیا تھا لیکن گزشتہ روز دوبارہ بلگورد سٹی سے یوکرائن جانے کی کوشش میں انہیں گرفتار کر کے جیل میں بند کردیا گیا ہے۔

ان کے علاوہ مزید پاکستانی بھی گرفتار ہوئے ہیں جن میں عامرعالم خان،تاج محمد بلوچ، شاکر بلوچ، عدن بلوچ شامل ہیں ان افراد کے پاس پاکستان اور ایران دونوںمما لک کے پاسپورٹس ہیں اور یہ بھی روس کے شہر بلگورد سٹی سے یوکرائن میں غیر قانونی طورپر گرفتار ہونے کی کوشش میں گرفتار ہوئے ہیں ۔جبکہ سیالکوٹ کا نوجوان محمد سفیان،جہلم کا محمد قاسم،حمزہ اسحاق، منڈی بہاوالدین کے محمدحسن ،عمران فیصل، مبشرخان بھی روس سے یورپ داخلے کی کوشش میں گرفتار ہوئے ہیں ۔

گرفتار ہونے والے تمام افراد فیفا فٹ بال ورلڈ کپ کے دوران فین آئی ڈی پر روس آئے تھے لیکن یہ لو گ پاکستان واپس جانے کی بجائے غیرقانونی طریقے سے یورپ جانے کی کوشش میں گرفتا کر لئے گئے ہیں۔ ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ ایجنٹ مافیا اس گھنائونے کام میں پوری طرح شامل ہے کچھ ایجنٹوں نے پاکستان میں میچز کی ٹکٹیں حاصل کر کے ان پر لوگوں کو یورپ جانے کا جھانسہ دیکر ان کی فین آئی ڈی بنا کر روس بھیجاجبکہ کہ اکثر پاکستانی خود پاکستان سے میچوں کی ٹکٹیں اور فین آئی ڈی بنا کر روس پہنچے اور یہاں سے ایجنٹوں سے رابطہ کر کے غیر قانونی طور پریورپ جانے کی کوشش کی۔

روس نے پہلے ہی تنبہہ کر دی تھی کے فٹ بال کیلئے آنے والے فینز کسی بھی غیر قانونی سرگرمی میں ملوث ہوئے تو ان سے سختی سے نمٹا جائے گا۔جبکہ پاکستان ایمبیسی ماسکو نے بھی اپنے پاکستانیوں سے اپیل کی تھی کہ روس میں آنے والے پاکستانی کسی ایجنٹ کے جھانسے میں نہ آئیں اور نہ ہی کوئی ایسی غیر قانونی حرکت کریں جس سے پاکستان کی بدنامی ہو۔لیکن بہت سے پاکستانی میچوں سے لطف اندوز ہونے کی بجائے یورپ نکلنے کی کوشش کر تے ہوئے یوکرائن، فن لینڈ، بیلاروس کے بارڈرز پر گرفتار ہوچکے ہیں۔روس میں مقیم پاکستانی کمیونٹی نے حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ ان لوگوں کے خلاف پاکستان میں بھی مقدمات قائم کئے جائیں اور پاکستان میں موجود ان ایجنٹوںکو فوری گرفتار کیا جائے جو پوری دنیا میں پاکستان کی بدنامی کا باعث بنے ہیں ۔

گرفتار ہونے والوں کی پاسپورٹس اور فین آئی ڈی کی کاپیاں……

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں