208

ایران پر امریکی پابندیاں یورپی یونین نے مسترد کردیں

پیرس(ورلڈ پوائنٹ نیوز) جوہری معاہدے سے دست برداری کے بعد امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران پر اقتصادی پابندیوں سے متعلق ایک بل پر دستخط کردیے، جسے یورپی یونین نے مسترد کردیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کر دیے ہیں، آج رات 12 بجے کے بعد ایران پر اقتصادی شعبے پر پابندیوں کا اطلاق ہوجائے گا، جسے یورپی یونین نے نہ ماننے کا فیصلہ کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یورپی یونین کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ یورپی یونین اس قسم کی اقتصادی پابندیوں کے خلاف ہے، ایران کے ساتھ اپنا کاروبار جاری رکھیں گے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ایران کے ساتھ معاشی تعلقات برقرار رکھیں گے، اور اس کے تحفظ کے لیے ہر ممکن کوشش کریں گے، امریکی پابندیوں کی تفصیلات سامنے آنے کے بعد یورپی یونین متفقہ حکمت عملی وضع کرے گی۔

خیال رہے کہ آج امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ایگزیکٹو آرڈر پر دستخط کردیے ہیں جس کا اطلاق آج سے ہوگا، جبکہ 5 نومبر کو توانائی اور تیل کی صنعتوں پر بھی پابندیاں لگائی جائیں گی۔

واضح رہے کہ پابندیوں سے متعلق صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ پابندیوں کے بعد ایران کے ساتھ تجارتی تعلقات سنگین نتائج کے ہوں گے، ایران کو رویہ تبدیل کرکے عالمی طاقتوں سے دوبارہ مذاکرات کرنا ہوں گے، نئے معاہدے میں ایرانی حکومت کی تمام منفی سرگرمیوں کا مکمل احاطہ ہوگا۔

یاد رہے کہ 2015 میں اس وقت کے امریکی صدر بارک اوباما اور ایرانی حکومت کے درمیان جوہری معاہدہ ہوا تھا جس کے سبب ایران پر سے معاشی پابندیاں ختم کردی گئی تھیں۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں