60

پاکستان میں بدامنی اور دیگرخطرناک کارروائیاں بھارتی سازش ہے، پرویز اقبال لوہسر

برسلز (ورلڈ پوائنٹ نیوز) ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن یورپ کے چیئرمین چوہدری پرویز اقبال لوسر نے یورپی کمیشن کے سامنے احتجاجی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت، پاکستان کے اندر دہشت انگیز کارروائیاں کرکے پاکستان کے حالات ابتر کرنے کی کوششیں کررہا ہے، بلکہ پختون تحفظ موومنٹ کے ذریعے پاکستان کے مختلف شہروں میں افغان موومنٹ کو متحرک کرکے بدامنی اور عدم تحفظ کی لہر کو پھیلا رہا ہے۔

مختلف شہروں سے بچوں کا اغوا، خواتین کے ساتھ زیادتی اور دیگر خطرناک کارروائیوں کے ذریعے ماحول کو خراب کیا جارہا ہے۔ برسلز میں یورپی کمیشن کے سامنے احتجاج کے دوران چند افغان جو ہندوستان کی پے رول پر پاکستان کے خلاف نعرے بازی کرتے ہیں انہوں نے جب پاکستان اور افواج پاکستان کے خلاف نعرے لگائے تو مقامی پولیس نے انہیں نہ صرف فوراً روکا بلکہ افغان کارندوں نے بغیر اجازت مظاہرہ کرنے کی ناکام کوشش کی اور پاکستانی احتجاج کو سبوتاژ کرنے کے لیے بدزبانی اور لڑائی، جھگڑے کی کوشش کی، تاکہ مظاہرے کو خراب کیا جاسکے۔

چنانچہ اس دوران بیلج پولیس نے انہیں روک کر وہاں سے بھاگنے پر مجبور کردیا۔ اس موقع پر پاکستانی و کشمیری کمیونٹی کے مقتدر حلقوں کی سرکردہ شخصیات نے ’’پاکستان زندہ باد، پاک آرمی زندہ باد‘‘ کے فلک شگاف نعرے لگائے اور پاکستان کے ساتھ اپنی والہانہ محبت کا اظہار کرتے ہوئے یکجہتی کی۔ اس موقع پر پاکستان مسلم لیگ (ن) بلجیم کے سینئر رہنما شیخ ماجد نے کہا کہ بھارت کشمیری عوام کے ساتھ پچھلے70سال سے غیر انسانی سلوک کرکے مقبوضہ وادی کے اندر جبراً قبضہ کیے ہوئے ہے اور کشمیری قوم کے حقوق سلب کرکے انہیں محکومی کی زندگیاں گزارنے پر مجبور کر رکھا ہے۔ انہوں نے (PTM) یورپ کے نمائندوں کی پاکستان کے خلاف نعرے بازی پر ناراضگی کا اظہار کیا۔

پی ٹی آئی بلجیم کے سینئر رہنما غلام ربانی بابو بھائی، میاں شعیب، محمد اظہر حسین اور چوہدری زاہد حسین بھدر نے اپنے مشترکہ پیغام میں ہندوستانی وزیراعظم نریندر مودی کو عندیہ دیا کہ اگر اس نے وادی کشمیر اور پاکستان کے اندر دہشت انگیز کارروائیاں بند نہ کیں تو پورے یورپ میں بسنے والی اوورسیز کمیونٹی بھارت کے خلاف احتجاجی ریلیاں نکالیں گے۔ مقررین نے اس بات پر زور دیا کہ مودی سرکار کشمیری عوام کے ساتھ ظلم و ستم کو بند کریں اور انہیں ان کا پیدائشی حق، حق خودارادیت دے۔ پختون آرگنائزیشن بلجیم کے صدر نوید خان نے پشتو میں خطاب کرتے ہوئےPTMکے ممبران کی یورپ کے اندر جارہانہ کارروائیوں کو پاکستان اور افغان کمیونٹی کے اندر نفرت کے بیج بونے کے مترادف قرار دیا اور کہا کہ چند بکے ہوئے افغان اوورسیز کمیونٹی کو آپس میں لڑواکر بدامنی پھیلانا چاہتے ہیں۔ ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن بلیجم کے صدر شاہد فاروقی اور سرپرست حاجی منیر لوسر نے افغان کمیونٹی کی پاکستان مخالف سرگرمیوں اور دو اقوام کے درمیان لڑائی پر افسوس کا اظہار کیا اور انہیں باور کرایا کہ دو ملین سے زیادہ افغانی کمیونٹی کو پاکستان نے نہ صرف سہارا دیا بلکہ انہیں گھر اور کاروباری مواقعے فراہم کرکے بہتر زندگیاں گزارنے کا سلیقہ دیا۔

مگر افسوس کہ ان کے ساتھ کی گئی نیکیاں آج فساد کی شکل میں پاکستانی عوام کو بھگتنی پڑ رہی ہیں۔ انہوں نے مودی سرکار کو تنبیہ کی کہ وہ کشمیری عوام پر انسانیت سوز مظالم کو بند کرے اور امن مذاکرات کے ذریعے خطے میں امن و امان کو بحال کرے۔ انہوں نےPTMکی یورپ میں کارروائیوں کو فساد قرار دیتے ہوئے بلجین پولیس سے ان کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ بھی کردیا۔ قمرالدین نے کہا کہPTMپاکستان کے خلاف سازش ہے اور یہ سازش ہندوستان کے ایما پر کی جارہی ہے، تاکہ کشمیر کے اندر جاری ظلم و ستم پر احتجاج کو روکا جاسکے۔ احتجاجی ریلی میں بلیج پولیس آفیسر نے ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن یورپ کے چیئرمین چوہدری پرویز اقبال لوسر کو یقین دلایا کہ وہ افغان کمیونٹی کی منفی سرگرمیوں کے خلاف کارروائی کریں گے۔ پروگرام کا آغاز تلاوت کلام پاک کے ساتھ کیا گیا۔

اس موقع پر مظاہرین نے کتبے، پاکستانی پرچم اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر ’’مودی سرکاری ہائے ہائے اور انڈیا، پاکستان کے اندر دہشت گردی بند کرے۔‘‘ اور ’’یورپی یونین اور اقوام متحدہ ہندوستان کی پاکستان کے اندر مداخلت کے خلاف بھارت کے خلاف نوٹس لے۔‘‘ کے نعرے درج تھے۔ ای یو پاک فرینڈ شپ فیڈریشن یورپ نے پرامن ریلی کے ذریعے یورپی مندوبین اور اعلیٰ حکام کو متنبہ کیا کہ وہ ایشیا میں امن و امان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کے لیے بھارت کی سرزنش کرے اور اسے جارہانہ کارروائیوں سے روکے۔ مظاہرے کے اختتام پر چوہدری خلیل نے دعا کی۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں