56

افغان حکومت۔طالبان مذاکرات ماسکو میں ہونگے،روس نے تصدیق کردی

ماسکو(ورلڈ پوائنٹ نیوز) روس نے افغان سیاست دانوں کو طالبان سےامن مذاکرات کے لئے 9 نومبر کو ماسکو بلا لیا ہے روسی حکام کے مطابق ،صدر اشرف غنی افغان ر ہنماوں کا وفد ماسکو بھیجنے پر رضا مند ہوگئے ہیں جس میں طالبان کے نمائندے بھی شریک ہونگے۔

اس سے قبل افغان حکومت نے موقف اختیار کیا تھا کہ اس سے امریکی سربراہی میں جاری امن عمل کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔روس کی جانب سے سابق صدر حامد کرزئی سمیت افغان حکومت سے قریبی تعلقات رکھنے والے 8 میں سے 6 رہنماوں کو دعوت دینے کی تصدیق ہوگئی ۔

روس نے رواں سال اگست میں بھی ماسکو میں امن مذاکرات کی تجویز دیتے ہوئے ایک سربراہی اجلاس میں طالبان سمیت 12 ممالک کو شرکت کی دعوت دی تھی ۔

افغان صدر اشرف غنی کی جانب سے دعوت مسترد کئے جانے پر اجلاس ملتوی کردیا گیا تھا۔اشرف غنی کا موقف تھا کہ طالبان کے ساتھ مذاکرات کابل حکومت کی سربراہی میں ہونے چاہئیں۔

روسی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریا زخاروا نے بریفنگ کے دوران صحافیوں کو بتایا کہ اجلاس کے شرکا٫ کے ناموں کو حتمی شکل دی جارہی ہے۔

سوشل میڈیا پر شیئر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں