98

تاتارستان کے دارالحکومت کازان میں سکول پر فائرنگ سے 8 طلبا سمیت 11 افراد ہلاک ہوگئے

کازان (ورلڈ پوائنٹ نیوز) روس کی مسلم ریاست تاتارستان کے درالحکومت کازان کے ایک اسکول میں بچوں پر ہونے والی فائرنگ کے نتیجے میں ایک استاد اور سات طلباء۔ ہلاک ہوگئے ہیں

تفصیلات کے مطابق صبح 10:30 بجے حملہ آور نے اس وقت سکول پر حملہ کردیا جب بچے اپنی اپنی کلاسوں میں پڑھ رہے تھے حملہ آور نے سکول میں داخل ہوتے ہی اندھادھند فائرنگ کردی جس سے پورے سکول میں بھگدڑ مچ گئ۔

فائرنگ کی آواز سن کر سکول کی تیسری منزل سے کچھ بچوں نے کھڑکیاں توڑ کر چھلانگیں لگائیں جس سے کچھ بچے شدید زخمی ہوگئے۔۔فائرنگ کے نتیجہ میں8 طلبا 2 اساتزہ اور ایک گارڈ جان کی بازی ہارگئے جبکہ زخمیوں میں 18 طلبا اور 3 استاد شامل ہیں جنہیں فوری طبی امداد کیلئے ہسپتال داخل کروادیا گیا ہے

بتایا گیا ہے کہ حملہ آور اکیلا تھا اس کی شناخت 19 سالہ الناز گالیوو کے نام سے ہوئی ہے جو مقامی شہری ہے

سانحہ کے بعد شہر بھر میں ایمرجنسی نافزکردی گئی ہے جبکہ روسی صدر پوتن نے واقعی کا فوری نوٹس لیتے ہوئے حملے کی تحقیقات کا حکم دیا ہے جبکہ صدر پوتن نے فائرنگ کے واقعہ کے بعد اسلحہ کی روک تھام کیلئے قوانین پر نظر ثانی کا حکم دیا ہے۔

ملزم کو گرفتار کرکے تفتیش شروع کردی گئی ہے جبکہ ابتدائی تفتیش میں ملزم نے اعتراف ملزم نے اعتراف کیا ہے کہ اس نے حملہ کی ٹریننگ یوٹیوب اور سوشل میڈیا سے لی تھی جبکہ اس حملے کو پب جی کا شاخسانہ بھی قرار دیا جارہا ہے

تاتارستان میں 12 مئی کو یوم سوگ کا اعلان بھی کیا گیاہے جبکہ کل سے تمام سکول بند کردیے گئے ہیں اور ان لائن کلاسز کی اجازت دی گئی ہے۔

19 سالہ حملہ آور

ہلاک ہونے والی سکول ٹیچر

فائرنگ کے بعد کلاس روم میں طلبا کی لاشیں پڑی ہیں

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں