186

شاہ محمود قریشی کا روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف سے ٹیلیفونک رابطہ

ماسکو(شاہد گھمن سے) وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے آج روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف کے ساتھ ٹیلیفونک گفتگو کی۔ دونوں وزرائے خارجہ نے باہمی دلچسپی کے دوطرفہ ، علاقائی اور عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اس بات کی تصدیق کی کہ روس کے ساتھ تعلقات پاکستان کی خارجہ پالیسی کی ایک اولین ترجیح ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیر خارجہ سرگئی لاوروف کے حالیہ دورہ پاکستان سے ہماری طویل مدتی کثیر جہتی شراکت داری کو مضبوط کرنے کے لئے دونوں فریقوں کی خواہش کی عکاسی ہوتی ہے۔ وزیر خارجہ شاہ محمودقریشی نے مزید کہا کہ پاک روس تعلقات نے گذشتہ دو دہائیوں کے دوران متاثر کن پیشرفت کی ہے اور ہمیں اپنے تعاون کو فائدہ اٹھانا جاری رکھنا چاہئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وزیر خارجہ سرگئی لاوروف کے دورے کے بعد سے ایک اہم پیشرفت شمالی جنوب گیس پائپ لائن پروجیکٹ (پاکستان اسٹریم) کی ترقی کے لئے بین حکومتی معاہدے میں ترامیم کے پروٹوکول پر دستخط کرنا تھا اور اس منصوبے کا جلد آغاز ہوگا۔

روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف نے پاکستان کی جانب سے روسی ویکسین سپتنک V کی 5 ملین خوراک کی درخواست پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ وزیر خارجہ نے امید ظاہر کی کہ مشترکہ طریقہ کار جیسے سیاسی مشاورت ، پاک روس آئی جی سی اور دیگر مشترکہ ورکنگ گروپوں کی میٹنگز کوویڈ صورتحال معمول پر لانے کے بعد ذاتی طور پر دوبارہ شروع ہوجائیں گی۔

دونوں وزرائے خارجہ نے حالیہ دوروں کے دوران کیے گئے فیصلوں پر عمل پیرا ہونے کی اہمیت پر زور دیا تاکہ انھیں ٹھوس نتائج میں تبدیل کیا جاسکے۔ دونوں فریقوں نے افغان مسئلے کے جلد مذاکرات کے لئے قریب سے کام کرنے پر اتفاق کیا۔

خبر کو سوشل میڈیا پر شئیر کریں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں